Wed. Feb 21st, 2024
20230303 041818
Bisp Tracking online
Bisp Tracking online

Bisp Tracking online

Bisp | Payment Tracking, CNIC Management System 2023

Busp | Payment Tracking, CNIC Management 2023
Bisp Tracking and Cash Card Management Information System is available here to track your Benazir card payment. This system is working for the poor people of Pakistan. A system is provided where you can track and check your Benazir Income Support Program, that way just enter your CNIC and get complete details whether you are eligible to get Bisp card or not.

BISP Tracking

If you have already applied for the card then go to the given link and enter your CNIC, this link will give you all the details about your card whether you are eligible or not, if you are not eligible So you can contact Benazir Income Support Program. Office. Head office number and email is provided if you are not eligible there is a complaint box where you can submit beneficiary details.

This is a welfare program working in Pakistan. The program was launched in July 2008. This is the largest program that has distributed 90 million rupees across Pakistan. It is a social safety net program that focuses on health, education, social security, and improved financial capability. Benazir Income Support Program uses methods of donations and scholarships. The Chairperson of the program is Dr. Sania Nishtar and the headquarters is F_block, Pakistan Secretariat, Islamabad Pakistan. The project has a budget of 1.15 billion US dollars. The official website is bisp.gov.pk.

Now Dr. Sania Nishtar is the Chairperson of PTI Governance.

BISP Tracking CNIC


Bisp Cash Card Tracking is available here. You can check your status by entering CNIC number. The main objective of launching BSP Cash Card is to empower women in the country. Many families in the country are below the poverty line, to overcome this situation.

Benazir Income Support Program Card was launched by Pakistan Peoples Party in 2008, former Prime Minister Yousuf Raza Gilani advised Asif Ali Zardari to launch Benazir Card to help widows, named after Benazir Bhutto who died in 2007. I was shot dead. A great leader and worked for his dream of empowering the people of Pakistan and the women of Pakistan.

You may also like

BISP Tracking
Ehsaas Cash Program
Ehsaas Sponsorship Program
Benazir Income Support Programme
Ehsaas Ration Programme
Ehsaas 25000
Keeping track of Ehsaas program

To qualify for cash payments under BISP, households need to earn more than Rs 6,000 per month. equals $67. Further Eligibility Conditions: Families require a female candidate with a valid identity card. Families of emotionally disabled people are considered ineligible for payments through Benazir Income. The Support Program includes those who have: Participants employed by Pakistani authorities, the military, or any other government-affiliated bureau Family members of persons receiving pensions or receiving post-retirement benefits from the authorities Those who have more than 3 acres of cultivation or more than 80 square yards of land. Share of residential property Participants earning income from other sources who have a bank account except microfinance banks and caregivers of low-income households. You can also check whether you are eligible for income support program or not by using BISP tracking through CNIC system, you can also download bisp application form from http://bisp.gov.pk website.

History of BISP
Benazir Income Support was started by Yousaf Raza Gilani in 2008 with the advice of Asif Ali Zardari. This program is a tribute to the loyal services of Benazir Bhutto. The project mainly worked for women from poor families in Pakistan. Now the Benazir Income Support Program is the largest aid program in Pakistan operating for 16 years. When the program was established in 2008, the government provided 34 billion rupees. On 18 June 2017, the government took a good step and launched an e-commerce platform for members.

BISP Program Structure


The Benazir Income Support Program provides assistance throughout Pakistan and also in Azad Jammu and Kashmir and the capital region of Islamabad.

Members of Parliament have suggested 8000 forms. A national database is included in the verification of eligible persons. Then in 2009, a proxy test was introduced to identify eligibility. For monitoring, an internal monitoring system was developed to check delivery. It also provides support for emergency relief.

Bisp Tracking online

Eligibility Criteria


The family must have a female applicant.
Women must be without a male family member such as a widow or divorcee.
Members must have National Identity Card.
Members may have a low-income family member with a disability.
Ineligible families
Persons employed by Government of Pakistan.
Members are drawing pension.
The family members own more than 3 acres of farmland.
Earnings from members.

sources there.

Benefits

With Rs 5,000 as subsidy, 20% increase in income and financial strength in a month. Members will get 1500 per month.

Regional offices in Punjab

Punjab

Ahmednagar Chatha – Ali Khanabad – Arifwala – Attock – Alipur – Sarai Alamgir – Sargodha – Shakargarh – Sheikhupura – Sialkot – Sohaw – Suianwala – Rahim Yar Khan – Faisalabad – Fateh Jang – Gakhar Mandi – Gujra – Multan – Gujranwala – Gujranwala. -Leh-Sadiqabad-Safdarabad-Sahiwal-Sambariyal-Sandari-Sangla Hill-Malkwal-Mamuri-Melsi-Mandi Bahauddin-Qila Didar Singh-Mian Chinnu-Mianwali-Muridke-Mianwali-Bangla-Muzaffargarh-Narowal-Rawal Pindi. Tandlianwala- Gujjar Khan- Bhairah- Bhalwal- Bahawalpur- Bhakkar- Chalianwala- Jampur- Jardanwala- Jhang- Hasilpur- Pakpattan- Jhelum- Kalabagh- Karur Lal Aisan- Haroonabad- Kasur- Kamalia- Khaniwal- Khanpur- Khanqah Sharif- Kharian. – Teiba. Singh- Khushab- Kot Ado- Daska- Davispur- Darya Khan- Dera Ghazi Khan- Patuki- Murree- Rajanpur- Dholar- Pindi Bhatian- Dinah- Haveli Lakha- Dinga- Deepalpur- Lahore- Nankana Sahib- Islamabad- Lala Musa. – Liaquatpur- Pind Dadan Khan- Pir Mahal- Qaimpur- Raboah- Raiwind- Harappa- Hafizabad- Jalalpur Jatan- Seranwali- Talagang- Taxila- Wahari- Wah Cantonment- Wazirabad- Yazman- Zafarwal- Kamuke- Ahmad Pur East – Bahawalnagar – Borewala – Joharabad.

Sindh

Jamshoro-Jangshahi-Kandhkot-Bharkan-Bheria Road-Raju Khanani-Chak-Dado-Degree-Diplo-Dokri-Kandyaro-Karachi-Kashmore-Kati Bandar-Khadro-Thatta-Thiri-Mirwah-Umarkot-Khairpur-Wada-Shahpur – Shah – Shikarpur – Sinjhuru – Sukkur – Tangwani – Tando Adam Khan – Matiari – Mihar – Mirpur Khas – Mathni – Mithi – Mehrabpur – Moro – Nagarparkar – Nodero – Thal – Ratodero – Rohri – Badin – Skarund – Sanghar – Harwan – Shahband Hyderabad-Islamkot-Bheria City-Jacobabad-Shahdadkot-Khapru-Kotri-Larkana-Tando Allahyar-Tando Muhammad Khan

Pakhtun Khaw

Latambar-Mastuj-Mengora-Nowshera-Paharpur-Abbottabad-Adezai-Alpuri-Akora Khattak-Ayubia-Banda Dawood Shah-Bannu-Doaba-Dir-Drosh-Hungu-Haripur-Kirk-Kohat-Kalachi-Laki Bakka Marwat- Mansehra-Mardan-Bitgram-Beirut-Chakdra-Charsada-Chitral-Dagar-Timargarh-Tordhar-Cherat-Rasalpur-Pabi-Peshawar-Saidu Sharif-Dargai-Dera Ismail Khan-Shiwa Ada-Swabi-Swat-Tangi-
Ehsaas Ration Programme

Bisp Tracking online
Bisp Tracking online

بسپ | ادائیگی سے باخبر رہنا، CNIC مینجمنٹ 2023
آپ کی بے نظیر کارڈ کی ادائیگی کو ٹریک کرنے کے لیے Bisp ٹریکنگ اور کیش کارڈ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم یہاں دستیاب ہے۔ یہ نظام پاکستان کے غریب عوام کے لیے کام کر رہا ہے۔ ایک سسٹم فراہم کیا گیا ہے جس سے آپ اپنے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو ٹریک اور چیک کر سکتے ہیں، اس طریقہ سے صرف اپنا CNIC ڈالیں اور مکمل تفصیل حاصل کریں کہ آیا آپ Bisp کارڈ حاصل کرنے کے اہل ہیں یا نہیں۔

بی آئی ایس پی ٹریکنگ

اگر آپ پہلے ہی کارڈ کے لیے اپلائی کر چکے ہیں تو دیے گئے لنک پر جائیں اور اپنا CNIC درج کریں، یہ لنک آپ کو آپ کے کارڈ کے بارے میں تمام تفصیلات فراہم کرے گا کہ آپ اہل ہیں یا نہیں، اگر آپ اہل نہیں ہیں تو آپ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سے رابطہ کر سکتے ہیں۔ دفتر. ہیڈ آفس نمبر اور ای میل فراہم کیا جاتا ہے اگر آپ اہل نہیں ہیں تو وہاں ایک شکایت باکس ہے جہاں آپ فائدہ اٹھانے والے کی تفصیلات جمع کرا سکتے ہیں۔

یہ پاکستان میں کام کرنے والا ایک فلاحی پروگرام ہے۔ پروگرام جولائی 2008 میں شروع کیا گیا۔ یہ سب سے بڑا پروگرام ہے جس نے پورے پاکستان میں 90 ملین روپے تقسیم کیے ہیں۔ یہ ایک سوشل سیفٹی نیٹ پروگرام ہے جو صحت، تعلیم، سماجی تحفظ، اور بہتر مالی صلاحیت پر مرکوز ہے۔ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام عطیات اور اسکالرشپ کے طریقے استعمال کرتا ہے۔ پروگرام کی چیئرپرسن ڈاکٹر ثانیہ نشتر ہیں اور ہیڈ کوارٹر F_block، پاکستان سیکرٹریٹ، اسلام آباد پاکستان ہے۔ اس منصوبے کا بجٹ 1.15 بلین امریکی ڈالر ہے۔ سرکاری ویب سائٹ bisp.gov.pk ہے۔

اب ڈاکٹر ثانیہ نشتر پی ٹی آئی گورننس کی چیئرپرسن ہیں۔

BISP ٹریکنگ CNIC
Bisp کیش کارڈ ٹریکنگ یہاں دستیاب ہے۔ آپ CNIC نمبر درج کرکے اپنی حیثیت کی جانچ کر سکتے ہیں۔ بی ایس پی کیش کارڈ لانچ کرنے کا بنیادی مقصد ملک میں خواتین کو بااختیار بنانا ہے۔ ملک میں بہت سے خاندان غربت کی لکیر سے نیچے ہیں، اس صورتحال پر قابو پانے کے لیے۔

بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کارڈ پاکستان پیپلز پارٹی نے 2008 میں شروع کیا تھا، سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے آصف علی زرداری کو مشورہ دیا کہ وہ بیواؤں کی مدد کے لیے بے نظیر کارڈ لانچ کریں، بے نظیر بھٹو کے نام پر جنہیں 2007 میں گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔ ایک عظیم رہنما اور اس نے پاکستان کے لوگوں اور پاکستان کی خواتین کو بااختیار بنانے کے اپنے خواب کے لیے کام کیا۔

آپ بھی پسند کر سکتے ہیں

بی آئی ایس پی ٹریکنگ
احساس کیش پروگرام
احساس کفالت پروگرام
بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام
احساس راشن پروگرام
احساس 25000
احساس پروگرام سے باخبر رہنا

BISP کے تحت نقد ادائیگیوں کے لیے اہل ہونے کے لیے، گھرانوں کو ماہانہ 6,000 روپے سے زیادہ کمانے کی ضرورت ہے۔ $67 کے برابر ہے۔ اہلیت کی مزید شرائط: خاندانوں کو ایک درست شناختی کارڈ رکھنے والی خاتون امیدوار کی ضرورت ہے ایک واحد درخواست دہندہ ایک بیوہ یا مطلقہ خاتون ہونی چاہیے جس میں گھر کا کوئی مرد فرد نہ ہو اہل خاندانوں میں وہ افراد شامل ہیں جو جسمانی طور پر یا جذباتی طور پر معذور افراد کے خاندانوں کو بے نظیر انکم کے ذریعے رقم کی ادائیگی کے لیے نااہل سمجھا جاتا ہے۔ سپورٹ پروگرام میں وہ لوگ شامل ہیں جن کے پاس: پاکستانی حکام، فوج، یا کسی دوسرے حکومت سے منسلک بیورو کے ذریعے استعمال کیے جانے والے شرکاء پنشن حاصل کرنے والے یا حکام سے ریٹائرمنٹ کے بعد کے فوائد حاصل کرنے والے افراد کے خاندان کے افراد جن کے پاس 3 ایکڑ سے زیادہ کھیتی یا 80 مربع گز سے زیادہ زمین ہے۔ رہائشی املاک کا حصہ دوسرے وسائل سے آمدنی حاصل کرنے والے شرکاء جن کے پاس بینک اکاؤنٹ ہے مائیکروفنانس بینکوں اور کم آمدنی والے گھرانوں کی دیکھ بھال کرنے والے افراد۔ آپ BISP ٹریکنگ بذریعہ CNIC سسٹم استعمال کر کے بھی چیک کر سکتے ہیں کہ آیا آپ انکم سپورٹ پروگرام کے اہل ہیں یا نہیں، آپ bisp درخواست فارم http://bisp.gov.pk ویب سائٹ سے بھی ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں۔

Bisp Tracking online

بی آئی ایس پی کی تاریخ
بے نظیر انکم سپورٹ کا آغاز یوسف رضا گیلانی نے 2008 میں آصف علی زرداری کے مشورے سے کیا تھا۔ یہ پروگرام بے نظیر بھٹو کی وفادارانہ خدمات کو خراج تحسین ہے۔ اس منصوبے نے بنیادی طور پر پاکستان میں غریب خاندانوں سے تعلق رکھنے والی خواتین کے لیے کام کیا۔ اب بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام پاکستان میں 16 سال سے کام کرنے والا سب سے بڑا امدادی پروگرام ہے۔ جب یہ پروگرام 2008 میں قائم ہوا تو حکومت 34 ارب روپے فراہم کرتی ہے۔ 18 جون 2017 کو، حکومت نے ایک اچھا قدم اٹھایا اور اراکین کے لیے ایک ای کامرس پلیٹ فارم کا آغاز کیا۔

بی آئی ایس پی پروگرام کا ڈھانچہ
بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام پورے پاکستان میں اور آزاد جموں و کشمیر میں بھی امداد فراہم کرتا ہے اور اسلام آباد دارالحکومت کا علاقہ ہے۔

ارکان پارلیمنٹ نے 8000 فارم تجویز کیے ہیں۔ قومی ڈیٹا بیس اہل افراد کی تصدیق میں شامل ہے۔ پھر 2009 میں، پراکسی یعنی اہلیت کی شناخت کے لیے ٹیسٹ متعارف کرایا گیا۔ نگرانی کے لیے، ترسیل کی جانچ کے لیے ایک اندرونی نگرانی کا نظام تیار کیا گیا تھا۔ یہ ہنگامی امداد کے لیے بھی مدد فراہم کرتا ہے۔

اہلیت کا معیار
خاندان کے پاس ایک خاتون درخواست گزار ہونا ضروری ہے۔
خواتین کا خاندان کے کسی مرد کے بغیر ہونا چاہیے جیسے بیوہ یا طلاق یافتہ۔
ممبران کے پاس قومی شناختی کارڈ ہونا ضروری ہے۔
اراکین کے پاس کم آمدنی والا خاندان کا کوئی معذور فرد ہو سکتا ہے۔
نااہل خاندان
حکومت پاکستان کی طرف سے ملازم افراد۔
ممبران پنشن لے رہے ہیں۔
خاندان کے افراد 3 ایکڑ سے زیادہ کھیتی باڑی کے مالک ہیں۔
ممبران سے آمدنی حاصل ہوتی ہے۔

وہاں کے ذرائع.

فوائد

امدادی رقم 5,000 روپے کے ساتھ ایک ماہ میں آمدنی اور مالی طاقت میں 20 فیصد اضافہ کرتی ہے۔ ممبران کو ماہانہ 1500 ملیں گے۔

پنجاب میں علاقائی دفاتر

Bisp Tracking online

پنجاب

احمد نگر چٹھہ- علی خان آباد- عارفوالا- اٹک- علی پور- سرائے عالمگیر- سرگودھا- شکر گڑھ- شیخو پورہ- سیالکوٹ- سوہاوہ- سوئیانوالہ- رحیم یار خان- فیصل آباد- فتح جنگ- گکھڑ منڈی- گوجرہ- ملتان- گوجرانوالہ- گوجرانوالہ۔ -لیہ-صادق آباد- صفدرآباد- ساہیوال- سمبڑیال- سمندری- سانگلہ ہل- ملکوال- ماموری- میلسی- منڈی بہاؤالدین- قلعہ دیدار سنگھ- میاں چنوں- میانوالی- مریدکے- میانوالی- بنگلہ- مظفر گڑھ- نارووال- راول پنڈی۔ تاندلیانوالہ- گوجر خان- بھیرہ- بھلوال- بہاولپور- بھکر- چلیانوالہ- جام پور- جڑانوالہ- جھنگ- حاصل پور- پاکپتن- جہلم- کالاباغ- کرور لال عیسن- ہارون آباد- قصور- کمالیہ- خانیوال- خانپور- خانقاہ شریف- کھاریاں- تیبہ۔ سنگھ- خوشاب- کوٹ ادو- ڈسکہ- ڈیوس پور- دریا خان- ڈیرہ غازی خان- پتوکی- مری- راجن پور- ڈھولر- پنڈی بھٹیاں- دینہ- حویلی لکھا- ڈنگہ- دیپالپور- لاہور- ننکانہ صاحب- اسلام آباد- لالہ موسیٰ- لیاقت پور- پنڈ دادن خان- پیر محل- قائم پور- ربوہ- رائے ونڈ- ہڑپہ- حافظ آباد- جا لالپور جٹاں- سیرانوالی- تلہ گنگ- ٹیکسلا- وہاڑی- واہ چھاؤنی- وزیر آباد- یزمان- ظفروال- کاموکے- احمد پور مشرقی- بہاولنگر- بورے والا- جوہر آباد۔

Bisp Tracking online

سندھ

جامشورو-جنگشاہی-کندھ کوٹ-بھرکان-بھیریا روڈ-راجو خانانی-چک-دادو-ڈگری-ڈپلو-ڈوکری-کنڈیارو-کراچی-کشمور-کیٹی بندر-کھدرو-ٹھٹھہ-تھری-میرواہ-عمرکوٹ-خیرپور-واڑہ-شاہ پور-شاہ -شکارپور-سنجھورو- سکھر- تنگوانی- ٹنڈو آدم خان- مٹیاری- میہڑ- میرپور خاص- مٹھنی- مٹھی- محراب پور- مورو- نگرپارکر- نوڈیرو- تھل- رتوڈیرو- روہڑی- بدین- سکرنڈ- سانگھڑ- ہڑواں- شاہبند حیدرآباد-اسلام کوٹ-بھیریا سٹی-جیکب آباد-شہدادکوٹ-کھپرو-کوٹری-لاڑکانہ-ٹنڈو اللہ یار-ٹنڈو محمد خان

پختون خواہ

لتامبر-مستوج-مینگورہ-نوشہرہ-پہاڑ پور-ایبٹ آباد-اڈیزئی-الپوری-اکوڑہ خٹک-ایوبیہ-بندہ داؤد شاہ-بنوں-دوآبہ-دیر-دروش-ہنگو-ہری پور-کرک-کوہاٹ-کلاچی-لکی بکہ مروت- مانسہرہ-مردان-بٹگرام-بیروٹ-چکدرہ-چارسدہ-چترال-ڈگر-تیمرگرہ-تورڈھر-چیرات-رسالپور-پبی-پشاور-سیدو شریف-درگئی-ڈیرہ اسماعیل خان-شیوہ اڈا-صوابی-سوات-تنگی-
احساس راشن پروگرام

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *