Election Schedule 2022

Election Schedule 2022
Election schedule 2022

The Election Commission of Pakistan has released the election schedule of baldayati election. Elections will be held on June 9. The names of the districts in which elections will be held are as follows:

ELECTION COMMISSION OF PAKISTAN

NOTIFICATION
Islamabad, the 14h April, 2022.
No.F.2(3)/2021-LGE(P):- Pursuant to the provisions of Article 140(A) of the
Constitution of Islamic Republic of Pakistan, Section 219 of the Election Act 2017 and all
other power enabling it in that behalf, Election Commission of Pakistan herby issues the
schedule for 1st Phase of Local Government Elections in the Districts D.G.Khan,
Rajanpur, Muzaffargarh, Layyah, Khanewal, Vehari, Bahawalpur, Sahiwal, Pakpattan,
T.T.Singh, Chiniot, Khushab, Sialkot, Hafizabad, Mandi Bahauddin, Jhelum and
Attock of the Punjab Province
and calls upon the electors of District Councils,
Metropolitan Corporations and Village & Neighbourhood Councils of the aforementioned
Districts to elect their representatives against the seat of Lord Mayor, City Mayor, District
Mayor, Deputy Mayors, Chairperson, Vice-Chairperson and Councilors of each category
from respective Local Governments in the prescribed manner and appoint in relation there
to following dates
Days
Date
Sr. No.
Activity
Public Notice for invitation of nomination papers to be
issued by the Returning Officers
1 Day
18.04.2022
1
5 Days
21.04.2022
to
25.04.2022
Dates for filing of nomination papers alongwith list of
Candidates of Political Parties/ Electoral Groups with the
Returning Officers by the candidates
2
26.04.2022
3
Publication of names of the nominated candidates
1 Day
13 Days
(Including
Eid days)
4
Last date for Scrutiny of nomination papers by the
Retuning Officers
27.04.2022
to
09.05.2022
10.05.2022
to
12.05.2022
3 Days
5
1 Day
14.05.2022
6
6
1 Day
16.05.2022
7


Last Date for filing of appeals before the Appellate
Tribunal against the rejection / acceptance of Nomination
Paper by the Returning Officers
Last date for deciding of appeals by the Appellate
Authority
Publication of 1st revised list of validly nominated
candidates
Last date for withdrawal of Candidature / Panel and
publication of 2nd revised list of candidates (if required).
Allotment of Election Symbols to the Political Parties and
Electoral Groups and publication of list of Political Parties
and Electoral Groups alongwith their contesting
candidates for each category of seat
Polling day
1 Day
19.05.2022
8
1 Day
20.05.2022
9
09.06.2022
10
5 Days
14.06.2022
14.4.22
11
Consolidation of Result
Cont…P/2

HOW TO REGISTER for vote?
vote Registration

VOTER REGISTERATION AS PER SECTION 27 OF ELECTION ACT 2017 (click here to Open)

You can submit your application along with a copy of CNIC to the District Election Commissioner (DEC)/ Registration Officer/Assistant Registration Officer of the district where you want to get your name enrolled. The prescribed Form (Enrolment / Transfer of Vote) is available online at the ECP website or they can be obtained free of cost from the office of the District Election Commissioner / Registration Officer OR Assistant Registration Officer/Display Centre Incharge.

VOTER FORMS:
Form 21: For Registration / Transfer of Vote
Form 22: For Objection / Deletion of Vote
Form 23: For Correction of Particulars

ELIGIBILITY TO BE A VOTER

A person shall be entitled to be enrolled as a voter in an electoral area if he—

(a) is a citizen of Pakistan;

(b) is not less than eighteen years of age;

(c) possesses a National Identity Card issued by the National Database and Registration Authority at any time till the last day fixed for inviting claims, objections and applications for preparation, revision or correction of electoral rolls;

(d) is not declared by a competent court to be of unsound mind; and

(e) is or is deemed under section 27 to be resident in the electoral area.

Explanation.—The National Identity Card issued by the National Database and Registration Authority shall be deemed to be valid for the purpose of registration as a voter or for casting vote in an election, notwithstanding the expiry of its validity period.

Check your voteRELATED LINKS
Election Laws
List of Political Parties
Symbols Allotted to Political Parties
FAQs
ECP
ABOUT ECP
Overview of ECP
Honourable CEC
Honourable Members
Officers
FOR VOTERS
How to Register
Check Your Registration
FAQs
Electoral Rolls
ELECTIONS
General Elections
LG Elections
Election Laws
Delimitation
Electoral Rolls
Party Position
MEDIA ECP
Press Releases
Newsletters/Publications
Notifications
Image Gallery
Video Gallery
Training Material
MISC.
Tenders
Contact Us
ECP Secretariat Officers Contact Numbers
Copyright © ECP 2018 – Election Commission of Pakistan.

8300 SMS SERVICE SINCE 28TH FEBRUARY 2012Please type your CNIC without Hyphen (-) and spaces on your mobile and send it to 8300, you will get updated voter record.

Check your vote here

الیکشن کمیشن آف پاکستان
آر آر آر آر آر آر
اطلاع
اسلام آباد، 14 اپریل، 2022۔
No.F.2(3)/2021-LGE(P):- آرٹیکل 140(A) کی دفعات کے مطابق
اسلامی جمہوریہ پاکستان کا آئین، الیکشن ایکٹ 2017 کی دفعہ 219 اور تمام
دوسری طاقت اس سلسلے میں اسے فعال کرتی ہے، الیکشن کمیشن آف پاکستان ہربی جاری کرتا ہے۔
ڈی جی خان کے اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کا شیڈول
راجن پور، مظفر گڑھ، لیہ، خانیوال، وہاڑی، بہاولپور، ساہیوال، پاکپتن،
ٹی ٹی سنگھ، چنیوٹ، خوشاب، سیالکوٹ، حافظ آباد، منڈی بہاؤالدین، جہلم اور
صوبہ پنجاب کا اٹک
اور ضلع کونسلوں کے انتخاب کرنے والوں سے مطالبہ کرتا ہے،
میٹروپولیٹن کارپوریشنز اور مذکورہ بالا کی ولیج اور نیبر ہڈ کونسلز
اضلاع اپنے نمائندے لارڈ میئر، سٹی میئر، ڈسٹرکٹ کی سیٹ کے خلاف منتخب کریں۔
میئر، ڈپٹی میئرز، چیئرپرسن، وائس چیئرپرسن اور ہر کیٹیگری کے کونسلرز
متعلقہ مقامی حکومتوں سے مقررہ طریقے سے اور وہاں کے سلسلے میں تقرری
مندرجہ ذیل تاریخوں تک
دن
تاریخ
نمبر نمبر
سرگرمی
کاغذات نامزدگی کی دعوت کے لیے پبلک نوٹس
ریٹرننگ افسران کی طرف سے جاری
1 دن
18.04.2022
1
5 دن
21.04.2022
کو
25.04.2022
کی فہرست کے ساتھ کاغذات نامزدگی داخل کرنے کی تاریخیں۔
سیاسی جماعتوں/ انتخابی گروپوں کے امیدواران کے ساتھ
امیدواروں کی طرف سے ریٹرننگ افسران
2
26.04.2022
3
نامزد امیدواروں کے ناموں کی اشاعت
1 دن
13 دن
(بشمول
عید کے دن)
4
کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کی آخری تاریخ
ریٹوننگ آفیسرز
27.04.2022
کو
09.05.2022
10.05.2022
کو
12.05.2022
3 دن
5
1 دن
14.05.2022
6
6
1 دن
16.05.2022
7
اپیل کے سامنے اپیل دائر کرنے کی آخری تاریخ
نامزدگی کو مسترد کرنے / قبول کرنے کے خلاف ٹریبونل
ریٹرننگ افسران کے کاغذات
اپیل کے ذریعے اپیلوں پر فیصلہ کرنے کی آخری تاریخ
اقتدار
جائز نامزد افراد کی پہلی نظرثانی شدہ فہرست کی اشاعت
امیدواروں
امیدواری / پینل سے دستبرداری کی آخری تاریخ اور
امیدواروں کی دوسری نظرثانی شدہ فہرست کی اشاعت (اگر ضرورت ہو)۔
سیاسی جماعتوں کو انتخابی نشانات کی الاٹمنٹ اور
انتخابی گروپس اور سیاسی جماعتوں کی فہرست کی اشاعت
اور انتخابی گروپس ان کے مقابلہ کے ساتھ
سیٹ کے ہر زمرے کے امیدوار
پولنگ کا دن
1 دن
19.05.2022
8
1 دن
20.05.2022
9
09.06.2022
10
5 دن
14.06.2022
14.4.22
11
نتیجہ کا استحکام
جاری… P/2

ووٹ کے لیے رجسٹر کیسے کریں؟
ووٹ رجسٹریشن

الیکشن ایکٹ 2017 کے سیکشن 27 کے مطابق ووٹر رجسٹریشن (کھولنے کے لیے یہاں کلک کریں)

آپ اپنی درخواست CNIC کی کاپی کے ساتھ اس ضلع کے ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر (DEC)/رجسٹریشن آفیسر/اسسٹنٹ رجسٹریشن آفیسر کو جمع کر سکتے ہیں جہاں آپ اپنا نام درج کروانا چاہتے ہیں۔ مقررہ فارم (اندراج / ووٹ کی منتقلی) ای سی پی کی ویب سائٹ پر آن لائن دستیاب ہے یا وہ ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر / رجسٹریشن آفیسر یا اسسٹنٹ رجسٹریشن آفیسر / ڈسپلے سینٹر انچارج کے دفتر سے مفت حاصل کیا جاسکتا ہے۔

ووٹر فارمز:
فارم 21: ووٹ کے اندراج / منتقلی کے لیے
فارم 22: اعتراض / ووٹ کو حذف کرنے کے لیے
فارم 23: تفصیلات کی تصحیح کے لیے

ووٹر بننے کی اہلیت

ایک شخص انتخابی علاقے میں بطور ووٹر اندراج کا حقدار ہوگا اگر وہ-

(a) پاکستان کا شہری ہے؛

(b) عمر اٹھارہ سال سے کم نہ ہو۔

(c) انتخابی فہرستوں کی تیاری، نظرثانی یا تصحیح کے لیے دعوؤں، اعتراضات اور درخواستوں کو مدعو کرنے کے لیے مقرر کردہ آخری دن تک کسی بھی وقت نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی کی طرف سے جاری کردہ قومی شناختی کارڈ رکھتا ہے۔

(d) کسی مجاز عدالت کی طرف سے ناقص دماغ کا قرار نہیں دیا گیا ہے۔ اور

(e) سیکشن 27 کے تحت انتخابی علاقے کا رہائشی سمجھا جاتا ہے یا سمجھا جاتا ہے۔

وضاحت۔ نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی کی طرف سے جاری کردہ قومی شناختی کارڈ کو بطور ووٹر رجسٹریشن کے مقصد کے لیے یا الیکشن میں ووٹ ڈالنے کے لیے درست سمجھا جائے گا، باوجود اس کے کہ اس کی میعاد ختم ہو جائے۔

اپنے ووٹ سے متعلق لنکس چیک کریں۔
الیکشن قوانین
سیاسی جماعتوں کی فہرست
سیاسی جماعتوں کو نشانات الاٹ کیے گئے۔
اکثر پوچھے گئے سوالات
ای سی پی
ای سی پی کے بارے میں
ای سی پی کا جائزہ
محترم CEC
معزز ممبران
افسران
ووٹرز کے لیے
رجسٹر کرنے کا طریقہ
اپنی رجسٹریشن چیک کریں۔
اکثر پوچھے گئے سوالات
انتخابی فہرستیں
انتخابات
عام انتخابات
ایل جی انتخابات
الیکشن قوانین
حد بندی
انتخابی فہرستیں
پارٹی پوزیشن
میڈیا ای سی پی
پریس ریلیز
خبرنامے/ اشاعتیں۔
اطلاعات
تصویری گیلری
ویڈیو گیلری
تربیتی مواد
MISC
ٹینڈرز
ہم سے رابطہ کریں۔
ای سی پی سیکرٹریٹ افسران کے رابطہ نمبر
کاپی رائٹ © ECP 2018 – الیکشن کمیشن آف پاکستان۔

28 فروری 2012 سے 8300 ایس ایم ایس سروس

براہ کرم اپنے موبائل پر ہائفن (-) اور خالی جگہوں کے بغیر اپنا CNIC ٹائپ کریں اور اسے 8300 پر بھیجیں، آپ کو ووٹر کا تازہ ترین ریکارڈ مل جائے گا۔

8300 SMS SERVICE SINCE 28TH FEBRUARY 2012Please type your CNIC without Hyphen (-) and spaces on your mobile and send it to 8300, you will get updated voter record.

Election Schedule 2022
Election schedule
Election Schedule 2022
Election schedule

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے بلدیاتی انتخابات کا شیڈول جاری کر دیا۔ انتخابات 9 جون کو ہوں گے۔ جن اضلاع میں انتخابات ہوں گے ان کے نام درج ذیل ہیں۔

img

ای سی پی کا جائزہ

ای سی پی سے متعلق آئینی شق

چیف الیکشن کمشنر اور الیکشن کمیشن کی تقرری

چیف الیکشن کمشنر

  1. (1) ایک چیف الیکشن کمشنر ہوگا (اس حصے میں کمشنر کہا گیا ہے)، جس کا تقرر صدر کرے گا۔

(2) کسی بھی شخص کو کمشنر مقرر نہیں کیا جائے گا جب تک کہ وہ سپریم کورٹ کا جج نہ رہا ہو یا سینئر سرکاری ملازم رہا ہو یا ٹیکنوکریٹ نہ ہو اور اس کی عمر اڑسٹھ سال سے زیادہ نہ ہو۔

وضاحت 1.—”سینئر سرکاری ملازم” سے مراد وہ سرکاری ملازم ہے جس نے وفاقی یا صوبائی حکومت کے تحت کم از کم بیس سال خدمات انجام دی ہوں اور BPS-22 یا اس سے اوپر میں ریٹائر ہوئے ہوں۔

وضاحت 2.—”ٹیکنو کریٹ” سے مراد وہ شخص ہے جو کم از کم سولہ سال کی تعلیم مکمل کرنے کی ڈگری کا حامل ہو، جسے ہائر ایجوکیشن کمیشن نے تسلیم کیا ہو اور کم از کم بیس سال کا تجربہ ہو، جس میں قومی سطح پر کامیابیوں کا ریکارڈ بھی شامل ہو۔ یا بین الاقوامی سطح پر۔

(2A) وزیر اعظم قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کے ساتھ مشاورت سے، کمشنر کی تقرری کے لیے تین نام پارلیمانی کمیٹی کو بھیجے گا تاکہ کسی ایک شخص کی سماعت اور تصدیق کی جا سکے۔

بشرطیکہ وزیر اعظم اور قائد حزب اختلاف کے درمیان اتفاق رائے نہ ہونے کی صورت میں ہر ایک الگ الگ فہرستیں غور کے لیے پارلیمانی کمیٹی کو بھیجے گا جو کسی ایک نام کی تصدیق کر سکتی ہے۔

Election schedule
election sschedule 2022

(2B) سپیکر کی طرف سے تشکیل دی جانے والی پارلیمانی کمیٹی ٹریژری بنچوں کے پچاس فیصد ارکان اور اپوزیشن جماعتوں کے پچاس فیصد ارکان پر مشتمل ہو گی، جو کہ مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) میں ان کی طاقت کی بنیاد پر متعلقہ پارلیمان کے ذریعے نامزد کی جائے گی۔ قائدین:

بشرطیکہ پارلیمانی کمیٹی کی کل تعداد بارہ ارکان پر مشتمل ہو جس میں سے ایک تہائی سینیٹ سے ہو گا:

مزید یہ کہ جب قومی اسمبلی تحلیل ہو جائے اور چیف الیکشن کمشنر کے عہدے پر کوئی جگہ خالی ہو جائے تو پارلیمانی کمیٹی کی کل رکنیت صرف سینیٹ کے اراکین پر مشتمل ہو گی اور اس شق کی مذکورہ بالا شقوں کا اطلاق ہو گا۔ .

(3) کمشنر یا ممبر کے پاس ایسے اختیارات اور افعال ہوں گے جو اسے آئین اور قانون کے ذریعے عطا کیے گئے ہیں۔

عہدے کا حلف

  1. دفتر میں داخل ہونے سے پہلے، کمشنر چیف جسٹس آف پاکستان کے سامنے پیش کرے گا اور الیکشن کمیشن کا رکن تیسرے شیڈول میں درج فارم میں کمشنر کے سامنے حلف اٹھائے گا۔ کمشنر اور ممبران کے عہدے کی مدت

کمشنر کے عہدے کی مدت [اور اراکین]

  1. (1) کمشنر اور ایک رکن، اس آرٹیکل کے تابع، اپنے عہدے پر آنے کے دن سے پانچ سال کی مدت کے لیے عہدہ سنبھالے گا:

بشرطیکہ ممبران میں سے دو پہلے ڈھائی سال کی میعاد ختم ہونے کے بعد ریٹائر ہو جائیں اور دو اگلے ڈھائی سال کی میعاد ختم ہونے کے بعد ریٹائر ہو جائیں:

مزید یہ کہ کمیشن ارکان کی پہلی مدت کے لیے قرعہ اندازی کرے گا جس میں سے دو ارکان پہلے ڈھائی سال کے بعد ریٹائر ہو جائیں گے:

یہ بھی شرط یہ ہے کہ کسی غیر معمولی اسامی کو پُر کرنے کے لیے مقرر کیے گئے رکن کی مدت ملازمت اس رکن کے دفتر کی غیر معیاد ختم ہونے والی ہو گی جس کی اسامی کو اس نے پُر کیا ہے۔
(2) کمشنر یا کسی رکن کو عہدے سے نہیں ہٹایا جائے گا سوائے اس طریقہ کے جس کے آرٹیکل 209 میں جج کو عہدے سے ہٹانے کے لیے اور اس شق کے مقاصد کے لیے آرٹیکل کے اطلاق میں، اس آرٹیکل میں کوئی حوالہ جج کو کمشنر یا جیسا بھی معاملہ ہو، ایک رکن کے حوالے سے سمجھا جائے گا۔
(3) کمشنر یا رکن صدر کو اپنے ہاتھ سے لکھ کر اپنے عہدے سے استعفیٰ دے سکتا ہے۔
(4) کمشنر یا ممبر کے دفتر میں خالی جگہ پینتالیس دنوں کے اندر پُر کی جائے گی۔

کمشنر [اور ممبران] کو منافع کا عہدہ نہ رکھنا

  1. (1) کمشنر یا رکن ایسا نہیں کرے گا-

(a) پاکستان کی خدمت میں منافع کا کوئی دوسرا عہدہ رکھتا ہو؛ یا

(b) خدمات انجام دینے کے لیے معاوضے کا حق رکھنے والے کسی دوسرے عہدے پر فائز ہوں۔

(2) ایک شخص جو کمشنر یا ممبر کے عہدے پر فائز رہا ہے وہ اس عہدے پر فائز ہونے کے بعد دو سال کی میعاد ختم ہونے سے پہلے پاکستان کی خدمت میں کوئی منافع بخش عہدہ نہیں رکھے گا۔

قائم مقام کمشنر

  1. کسی بھی وقت جب-

(a) کمشنر کا عہدہ خالی ہے، یا

(b) کمشنر غیر حاضر ہے یا کسی اور وجہ سے اپنے دفتر کے کام انجام دینے سے قاصر ہے، کمیشن کے ممبران کی عمر میں سب سے سینئر ممبر کمشنر کے طور پر کام کرے گا۔ الیکشن کمیشن

الیکشن کمیشن

  1. (1) مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے دونوں ایوانوں، صوبائی اسمبلیوں کے انتخاب اور ایسے دیگر عوامی دفاتر کے انتخاب کے لیے جن کی قانون میں وضاحت کی گئی ہے، ایک مستقل الیکشن کمیشن تشکیل دیا جائے گا۔ اس مضمون.

(2) الیکشن کمیشن پر مشتمل ہوگا-

(a)

کمشنر جو کمیشن کا چیئرمین ہو گا؛ اور

(b) چار اراکین، ہر صوبے سے ایک، جن میں سے ہر ایک ایسا شخص ہو گا جو ہائی کورٹ کا جج رہا ہو یا سینئر سرکاری ملازم رہا ہو یا ٹیکنوکریٹ ہو اور جس کی عمر پینسٹھ سال سے زیادہ نہ ہو، آرٹیکل 213 کی شق (2A) اور (2B) میں کمشنر کی تقرری کے لیے فراہم کردہ طریقے سے صدر کی طرف سے تقرری کی جائے گی۔

وضاحت۔—”سینئر سرکاری ملازم” اور “ٹیکنو کریٹ” کا وہی مطلب ہوگا جو آرٹیکل 213 کی شق (2) میں دیا گیا ہے۔

(3) الیکشن کمیشن کا یہ فرض ہوگا کہ وہ انتخابات کا انعقاد اور انعقاد کرے اور ایسے انتظامات کرے جو اس بات کو یقینی بنانے کے لیے ضروری ہوں کہ انتخابات ایمانداری، انصاف کے ساتھ، منصفانہ اور قانون کے مطابق ہوں اور بدعنوانی کو روکا جائے۔ خلاف.

کمیشن کے فرائض

  1. کمیشن پر ذمہ داری عائد کی جائے گی کہ-

(a) قومی اسمبلی، صوبائی اسمبلیوں اور مقامی حکومتوں کے انتخابات کے لیے انتخابی فہرستوں کی تیاری، اور ان فہرستوں کو اپ ٹو ڈیٹ رکھنے کے لیے وقتاً فوقتاً نظر ثانی کرنا؛

(b) سینیٹ کے انتخابات کا انعقاد اور انعقاد یا کسی ایوان یا صوبائی اسمبلی میں غیر معمولی اسامیوں کو پُر کرنا؛ اور

(c) الیکشن ٹربیونلز کا تقرر؛

(d) قومی اسمبلی، صوبائی اسمبلیوں اور مقامی حکومتوں کے عام انتخابات کا انعقاد؛ اور

(ای) ایسے دیگر افعال جن کی وضاحت مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے ایکٹ کے ذریعے کی جاسکتی ہے:

بشرطیکہ اس وقت تک جب تک کمیشن کے ممبران آئین (اٹھارویں ترمیم) ایکٹ، 2010 کے تحت آرٹیکل 218 کے شق (2) کے پیراگراف (b) کی دفعات کے مطابق سب سے پہلے مقرر کیے جاتے ہیں، اور اپنے دفتر میں داخل ہوتے ہیں، کمشنر اس آرٹیکل کے پیراگراف (a) (b) اور (c) میں درج فرائض کے ساتھ چارج رہے گا۔

کمیشن کی مدد کے لیے ایگزیکٹو حکام وغیرہ۔

  1. یہ وفاق اور صوبوں میں تمام ایگزیکٹو اتھارٹیز کا فرض ہو گا کہ وہ کمشنر اور الیکشن کمیشن کی ان کے کاموں کی انجام دہی میں مدد کریں۔

افسران اور عملہ

  1. جب تک مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) بذریعہ قانون دوسری صورت میں فراہم نہیں کرتی، الیکشن کمیشن صدر کی منظوری سے، کمشنر آف افسروں اور عملے کی تقرری کے لیے قواعد وضع کر سکتا ہے جس کے کاموں کے سلسلے میں ملازم رکھا جائے گا۔ الیکشن کمیشن اور ان کی ملازمت کی شرائط و ضوابط۔

انتخابی قوانین اور انتخابات کا طرز عمل
انتخابی قوانین

  1. آئین کے تابع، مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) بذریعہ قانون فراہم کر سکتی ہے:

(a) آرٹیکل 51 کی شق (3) اور (4) کے مطابق قومی اسمبلی میں نشستوں کی تقسیم؛

(b) الیکشن کمیشن کی جانب سے حلقہ بندیوں کی حد بندی بشمول مقامی حکومتوں کی حلقہ بندیوں کی؛

(c) انتخابی فہرستوں کی تیاری، حلقے میں رہائش کے تقاضے، اس سے متعلق اعتراضات کا تعین اور انتخابی فہرستوں کا آغاز؛

(d) انتخابات کے انعقاد اور انتخابات کے سلسلے میں پیدا ہونے والے شکوک و شبہات اور انتخابی درخواستوں کا فیصلہ؛

(e) انتخابات کے سلسلے میں بدعنوانی اور دیگر جرائم سے متعلق معاملات؛ اور

(f) دیگر تمام امور جو دونوں ایوانوں، صوبائی اسمبلیوں اور مقامی حکومتوں کے آئین کے لیے ضروری ہیں۔
لیکن ایسا کوئی قانون اس حصے کے تحت کمشنر یا الیکشن کمیشن کے کسی بھی اختیارات کو چھیننے یا ختم کرنے کا اثر نہیں رکھتا۔

ڈبل رکنیت کے خلاف بار

  1. (1) کوئی بھی شخص، بیک وقت، کا رکن نہیں ہو گا-

(a) دونوں ایوان؛ یا

(b) ایک ایوان اور ایک صوبائی اسمبلی؛ یا

(c) دو یا دو سے زیادہ صوبوں کی اسمبلیاں؛ یا

(d) ایک سے زیادہ نشستوں کے سلسلے میں ایک ایوان یا صوبائی اسمبلی۔

(2) شق (1) میں کوئی بھی چیز کسی شخص کو ایک ہی وقت میں دو یا زیادہ نشستوں کے لیے امیدوار بننے سے نہیں روکے گی، خواہ وہ ایک ہی باڈی میں ہو یا مختلف اداروں میں، لیکن اگر وہ ایک سے زیادہ نشستوں پر منتخب ہوتا ہے تو، ایسی آخری نشست کے نتائج کے اعلان کے تیس دن کے اندر، اپنی ایک نشست کے علاوہ باقی تمام نشستوں سے استعفیٰ دے دیں، اور اگر وہ ایسا نہیں کرتا ہے، تو وہ تمام نشستیں جن پر وہ منتخب ہوا ہے، کی میعاد ختم ہونے پر خالی ہو جائے گی۔ تیس دن کی مذکورہ مدت سوائے اس نشست کے جس پر وہ آخری بار منتخب ہوا ہے یا، اگر وہ ایک ہی دن ایک سے زیادہ نشستوں پر منتخب ہوا ہے، انتخاب کے لیے وہ نشست جس کے لیے اس کی نامزدگی آخری بار داخل کی گئی تھی۔

وضاحت۔ اس شق میں، “باڈی” کا مطلب ایوان یا صوبائی اسمبلی ہے۔

(3) ایک شخص جس پر شق (2) کا اطلاق ہوتا ہے وہ کسی بھی ایوان یا صوبائی اسمبلی میں اس وقت تک نشست نہیں لے گا جس کے لیے وہ منتخب ہوا ہو جب تک کہ وہ اپنی ایک نشست کے علاوہ تمام نشستوں سے استعفیٰ نہ دے دے۔

(4) شق (2) کے تابع اگر کسی ایوان یا صوبائی اسمبلی کا کوئی رکن دوسری نشست کے لیے امیدوار بنتا ہے جو کہ شق (1) کے مطابق وہ اپنی پہلی نشست کے ساتھ ساتھ نہیں رکھ سکتا، تو اس کی پہلی نشست دوسری نشست پر منتخب ہوتے ہی یہ نشست خالی ہو جائے گی۔

الیکشن کا وقت اور بذریعہ

ای الیکشن

  1. (1) قومی اسمبلی یا صوبائی اسمبلی کے عام انتخابات جس دن اسمبلی کی میعاد ختم ہونے والی ہے اس کے فوراً بعد ساٹھ دن کی مدت کے اندر کرائے جائیں گے، الا یہ کہ اسمبلی جلد تحلیل ہو جائے، اور انتخابات کے نتائج کا اعلان اس دن سے چودہ دن پہلے نہیں کیا جائے گا۔

(1A) اسمبلی کی مدت پوری ہونے پر تحلیل ہونے پر، یا آرٹیکل 58 یا آرٹیکل 112 کے تحت تحلیل ہونے کی صورت میں، صدر، یا گورنر، جیسا کہ معاملہ ہو، ایک نگراں کابینہ کا تقرر کرے گا:

بشرطیکہ نگراں وزیراعظم کا تقرر صدر وزیراعظم اور سبکدوش ہونے والی قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کی مشاورت سے کرے گا اور نگران وزیراعلیٰ کا تقرر گورنر چیف کی مشاورت سے کرے گا۔ وزیر اور سبکدوش ہونے والی صوبائی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف:

مزید یہ کہ اگر وزیر اعظم یا وزیر اعلیٰ اور ان کے متعلقہ قائد حزب اختلاف کسی شخص کو نگران وزیر اعظم یا نگران وزیر اعلیٰ کے طور پر مقرر کرنے پر متفق نہیں ہیں، جیسا کہ معاملہ ہو، دفعات آرٹیکل 224A کی پیروی کی جائے گی:

یہ بھی شرط ہے کہ وفاقی اور صوبائی نگراں کابینہ کے ارکان کا تقرر نگران وزیر اعظم یا نگراں وزیر اعلیٰ کے مشورے پر کیا جائے گا، جیسا کہ معاملہ ہو۔

(1B) نگران کابینہ کے ارکان بشمول نگران وزیراعظم اور نگراں وزیراعلیٰ اور ان کے قریبی خاندان کے افراد ایسی اسمبلیوں کے فوری بعد ہونے والے انتخابات میں حصہ لینے کے اہل نہیں ہوں گے۔

وضاحت۔ اس شق میں، “فوری فیملی ممبرز” سے مراد شریک حیات اور بچے ہیں۔

(2) جب قومی اسمبلی یا صوبائی اسمبلی تحلیل ہو جاتی ہے، تو اسمبلی کے عام انتخابات تحلیل ہونے کے نوے دن کے اندر کرائے جائیں گے، اور انتخابات کے نتائج کا اعلان اختتام کے چودہ دن بعد نہیں کیا جائے گا۔ انتخابات کے.

(3) سینیٹ کی نشستوں کو پر کرنے کے لیے الیکشن جو سینیٹ کے اراکین کی میعاد ختم ہونے پر خالی ہونے والی ہیں، اس دن سے فوری طور پر تیس دن پہلے نہیں کرائے جائیں گے جس دن خالی ہونے والی ہیں۔

(4) جب، قومی اسمبلی یا صوبائی اسمبلی کی تحلیل کے علاوہ، ایسی کسی اسمبلی میں کوئی جنرل نشست اس اسمبلی کی میعاد ختم ہونے سے ایک سو بیس دن پہلے خالی ہو جائے، تو اسے بھرنے کے لیے الیکشن ہو گا۔ نشست خالی ہونے کے ساٹھ دن کے اندر اندر منعقد کی جائے گی۔

(5) جب سینیٹ میں کوئی نشست خالی ہو جائے تو اس نشست کے خالی ہونے کے تیس دن کے اندر اندر اس نشست کو پُر کرنے کے لیے الیکشن کرایا جائے گا۔

(6) جب قومی اسمبلی یا صوبائی اسمبلی میں خواتین یا غیر مسلموں کے لیے مخصوص نشست کسی رکن کی موت، استعفیٰ یا نااہلی کی وجہ سے خالی ہوتی ہے، تو اسے اگلا فرد ترجیح کے لحاظ سے پُر کرے گا۔ امیدواروں کی پارٹی لسٹ الیکشن کمیشن کو جمع کرائی جائے جس سیاسی جماعت کے ممبر نے ایسی سیٹ خالی کی ہو۔

بشرطیکہ اگر کسی وقت پارٹی کی فہرست ختم ہو جائے تو متعلقہ سیاسی جماعت کسی بھی اسامی کے لیے نام پیش کر سکتی ہے جو اس کے بعد ہو سکتی ہے۔

کمیٹی یا الیکشن کمیشن کی طرف سے قرارداد

224A (1) اگر وزیر اعظم اور سبکدوش ہونے والی قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کسی شخص کو نگران وزیر اعظم کے طور پر مقرر کرنے پر متفق نہیں ہوتے ہیں، تو وہ قومی اسمبلی کی تحلیل کے تین دن کے اندر اندر بھیجیں گے۔ قومی اسمبلی کے سپیکر کی طرف سے فوری طور پر تشکیل دی جانے والی کمیٹی کے لیے دو دو نامزد، سبکدوش ہونے والی قومی اسمبلی یا سینیٹ کے آٹھ اراکین پر مشتمل ہوں، یا دونوں، جن کی وزارت خزانہ اور اپوزیشن سے مساوی نمائندگی ہو، وزیراعظم کی طرف سے نامزد کیا جائے گا۔ بالترتیب وزیر اور اپوزیشن لیڈر۔

(2) اگر کوئی وزیر اعلیٰ اور سبکدوش ہونے والی صوبائی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کسی شخص کو نگراں وزیر اعلیٰ کے طور پر مقرر کرنے پر متفق نہیں ہوتے ہیں، تو اس اسمبلی کی تحلیل کے تین دن کے اندر، وہ دو کو آگے بھیجیں گے۔ ہر ایک کو صوبائی اسمبلی کے سپیکر کی طرف سے فوری طور پر تشکیل دی جانے والی کمیٹی کے لیے نامزد کیا جائے گا، جس میں سبکدوش ہونے والی صوبائی اسمبلی کے چھ اراکین ہوں گے جن کی ٹریژری اور اپوزیشن سے مساوی نمائندگی ہو گی، جنہیں بالترتیب وزیر اعلیٰ اور قائد حزب اختلاف نامزد کیا جائے گا۔

(3) شق (1) یا (2) کے تحت تشکیل دی گئی کمیٹی نگران وزیر اعظم یا نگراں وزیر اعلیٰ کے نام کو حتمی شکل دے گی، جیسا کہ معاملہ ہو، معاملہ اس کو بھیجے جانے کے تین دن کے اندر۔ : بشرطیکہ مذکورہ مدت میں کمیٹی کی جانب سے اس معاملے کا فیصلہ نہ کرنے کی صورت میں، نامزد امیدواروں کے نام دو دن کے اندر حتمی فیصلے کے لیے الیکشن کمیشن آف پاکستان کو بھیجے جائیں گے۔

(4) موجودہ وزیر اعظم

اور موجودہ وزیر اعلیٰ نگران وزیر اعظم اور نگراں وزیر اعلیٰ کی تقرری تک اپنے عہدے پر برقرار رہے گا، جیسا کہ معاملہ ہو سکتا ہے۔

(5) شق (1) اور (2) میں موجود کسی بھی چیز کے باوجود، اگر اپوزیشن کے اراکین مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) میں پانچ سے کم اور کسی صوبائی اسمبلی میں چار سے کم ہوں، تو وہ سب مذکورہ بالا شقوں میں مذکور کمیٹی کے ممبر ہوں گے اور کمیٹی کو مناسب طور پر تشکیل دیا گیا سمجھا جائے گا۔

انتخابی تنازعہ

225۔ کسی ایوان یا صوبائی اسمبلی کے انتخابات پر سوالیہ نشان نہیں لگایا جائے گا سوائے اس انتخابی پٹیشن کے جو کہ ایسے ٹربیونل کو پیش کی جائے اور اس طریقے سے جس کا تعین مجلس شوریٰ (پارلیمنٹ) کے ایکٹ سے کیا جائے۔

خفیہ رائے شماری کے ذریعے انتخابات

226۔ آئین کے تحت وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کے علاوہ تمام انتخابات خفیہ رائے شماری سے ہوں گے۔

اپنے ووٹ سے متعلق لنکس چیک کریں۔
الیکشن قوانین
سیاسی جماعتوں کی فہرست
سیاسی جماعتوں کو نشانات الاٹ کیے گئے۔
اکثر پوچھے گئے سوالات
ای سی پی
ای سی پی کے بارے میں
ای سی پی کا جائزہ
محترم CEC
معزز ممبران
افسران
ووٹرز کے لیے
رجسٹر کرنے کا طریقہ
اپنی رجسٹریشن چیک کریں۔
اکثر پوچھے گئے سوالات
انتخابی فہرستیں
انتخابات
عام انتخابات
ایل جی انتخابات
الیکشن قوانین
حد بندی
انتخابی فہرستیں
پارٹی پوزیشن
میڈیا ای سی پی
پریس ریلیز
خبرنامے/ اشاعتیں۔
اطلاعات
تصویری گیلری
ویڈیو گیلری
تربیتی مواد
MISC
ٹینڈرز
ہم سے رابطہ کریں۔
ای سی پی سیکرٹریٹ افسران کے رابطہ نمبر
کاپی رائٹ © ECP 2018 – الیکشن کمیشن آف پاکستان۔

This website is best to find Government jobs of your own choice. We collected different government jobs from different newspapers. We provide you with the exact qualifications and other details about the post. You can find the latest government jobs on this website.
Government jobs link 1 👇👇👇👇👇👇👇👇
https://seoarticles4all.com/sitemap/
Government jobs Link 2 👇👇👇👇👇
https://www.aiouhelps.com/p/sitemap.html?m=1
Join us on Whatsapp👇👇👇👇
https://chat.whatsapp.com/GYzeONTnmZ75HWidY3rUjJ
Join us on Facebook 👇👇👇👇
https://m.facebook.com/Englishliterature147/
Join us on our Youtube channel 👇👇👇
https://youtube.com/channel/UCGdJzqKVWCYxW0WgK1Oj9zA
Join Us on Telegram 👇👇👇👇👇
https://t.me/+gPj5ZxCk0Wk5MDU0
Join us on Twitter 👇👇👇👇👇👇
https://twitter.com/Majid_writer?t=Ob81WbPDHuo1JM9xAUo8Tw&s=09
Join Us on Linkedin
https://www.linkedin.com/in/majid-farooq-76a0ab12b

election schedule 2022

Leave a Comment

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: